ماں تو نے ہمیں پالا

بابا کی یاد کروائی ہوئی دوسری نظم

ماں تو نے ہمیں پالا پوسا بڑے بڑے دکھ پائے
گرمی سردی جھیلی تن پر گود میں ہمیں لٹائے
ہم کو پیار کی دولت بخشی سکھ اور چین دیا
ایک ہمارے پیار کی خاطر کیا ,کیا نہیں کیا
بچو میرے پاس تو آؤ، میری بات سنو
مرتے مرتے مر جاؤ پر ماں کو دکھ نہ دو

( شاعر نامعلوم)

2 Comments

  1. Ameer Hamza Awan said:

    Mashaallah, very well written

    April 24, 2020
    Reply
  2. Mamoona said:

    Outstanding

    April 24, 2020
    Reply

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *